الثلاثاء، 04 ربيع الثاني 1440| 2018/12/11
Saat: (M.M.T)
Menu
القائمة الرئيسية
القائمة الرئيسية

المكتب الإعــلامي
ولایہ پاکستان

ہجری تاریخ    28 من رمــضان المبارك 1439هـ شمارہ نمبر: PR18039
عیسوی تاریخ     پیر, 28 مئی 2018 م

 

28 مئی یوم تکبیر کے دن کمزوری کا مظاہرہ:

 

ٹرمپ کے حکم پر پاکستان کے حکمران خطے میں بھارت کو بالادست قوت بنانے کی راہ ہموار کررہے ہیں

 

28 مئی 1998 کو پاکستان نے سات ایٹمی دھماکے کر کے بھارت کے ایٹمی دھماکوں کامنہ توڑ جواب دیا تھا اور اس دن کو یوم تکبیرکا نام دیا گیا ۔ لیکن اس سال اس دن کے موقع پر پاکستان کے دفتر خارجہ نے کم سے کم مدافعتی قوت (Minimum Deterrence) رکھنے کی پیش کش کر کے اس بات کی تصدیق کردی ہے کہ پاکستان کے حکمران امریکہ کے اس منصوبے میں اس کا ساتھ دے رہے ہیں جس کا مقصد بھارت کو خطے کی بالادست قوت بنانا ہے ۔ اپنی حکمرانی کے لیے واشنگٹن کی مسلسل حمایت کے حصول کی خاطر پاکستان کے حکمرانوں نے مسلسل بھارت کی جارحانہ کارروائیوں کے جواب میں امن اور مصالحت کی پیش کش  کی۔ بھارت ایک جانب مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کا قتل عام کررہا ہے،کسی  بوڑھے، بچے یا خاتون کو بخش نہیں رہا لیکن پاکستان کی سیاسی و فوجی قیادت بھارت کو ایٹمی صلاحیت پر مصالحت کی پیشکش کے ساتھ ساتھ اسے معاشی فوائد پہنچانے کے لیے  کوشاں ہے۔ بھارت فاٹا اور بلوچستان میں سر حد پار سے دہشت گردی کروا رہا ہے اور لائن آف کنٹرول کے اس طرف ہمارے علاقے پر مسلسل بمباری اور فائرنگ کررہا ہے لیکن پاکستان کے آرمی چیف اپنے "باجوہ ڈاکٹرائن" کے تحت بار بار بھارت سے بات چیت کی اپنی خواہش کا اظہار کررہے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ اس سال ستمبر میں روس میں شنگھائی کانفرنس تنظیم کے تحت بھارت کے ساتھ مشترکہ فوجی مشقوں کی تیاری بھی کررہے ہیں۔ اور پاکستان کے حکمرانوں نے "دی سپائی کرونیکلز"(The Spy Chronicles) کتاب کو بھارت کے ساتھ نارملائیزشن کی بحث کو شروع کرنے کے لیے استعمال کیا ہے تا کہ پاکستان  اور بھارت میں انتخابات کے بعد بات چیت کے لیے ماحول بنایا جاسکے۔

 

اے پاکستان کے مسلمانو!

ہندو حکمران اشرافیہ کمزوری کا جواب مزید جارحیت سے دیتی ہے اور ہمارے مفادات کو نقصان پہنچاتی ہے۔  ہندو اشرافیہ اس بات کی حقدار نہیں کہ وہ علاقائی امور کی دیکھ بحال کرے جس میں کامیابی کے لیے امریکہ اور پاکستان کی قیادت میں موجود امریکہ کے ایجنٹ کام کررہے ہیں۔ اس علاقے میں اسلام کی آمد سے قبل ہندو اشرافیہ اپنے ہی لوگوں کو ظلم و جبر کا نشانہ بناتی تھی۔ جب برطانیہ نے اس علاقے پر حملہ اور قبضہ کیا تو اس ہندو اشرافیہ نے استعماری برطانیہ کے جبر میں اس کا بھر پور ساتھ دیا ۔ تقسیم کے بعد اس ہندو اشرافیہ نے ہمیں نقصان پہنچانے کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیا۔ وہ ہندو اشرافیہ جو اپنی سرحدوں میں رہائش پزیر مسلمانوں کو انصاف اور تحفظ فراہم نہیں کرتی وہ کس طرح  بنگلادیش، مقبوضہ کشمیر، افغانستان اور پاکستان کے مسلمانوں کو تحفظ فراہم کرے گی؟ لیکن اس کھلی حقیقت کے باوجود پاکستان کے حکمران اکھنڈ بھارت کے قیام کے لیے ہندو اشرافیہ کے سامنے جھکتے چلے جارہے ہیں جبکہ اللہ سبحانہ و تعالیٰ نے فرمایا ،

 

يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا لاَ تَتَّخِذُوا عَدُوِّي وَعَدُوَّكُمْ أَوْلِيَاءَ تُلْقُونَ إِلَيْهِمْ بِالْمَوَدَّةِ وَقَدْ كَفَرُوا بِمَا جَاءَكُمْ مِنْ الْحَقِّ

"مومنو!اگر تم میری راہ میں لڑنے اور میری خوشنودی طلب کرنے کے لئے  نکلے ہو تو میرے اور اپنے دشمنوں کو دوست نہ بناؤ۔ تم تو ان کو دوستی کے پیغام بھیجتے ہو اور وہ (دین) حق سے جو تمہارے پاس آیا ہے منکر ہیں"(الممتحنہ:1)۔

 

ان بے شرم حکمرانوں نے ہندو ریاست کو وہ رعایتیں دیں ہیں جو وہ اپنے بل بوتے پر کسی صورت حاصل نہیں کرسکتی تھی جبکہ اللہ سبحانہ و تعالیٰ نے فرمایا ،

 

إِن يَثْقَفُوكُمْ يَكُونُواْ لَكُمْ أَعْدَآءً وَيَبْسُطُواْ إِلَيْكُمْ أَيْدِيَهُمْ وَأَلْسِنَتَهُمْ بِالسُّوءِ وَوَدُّواْ لَوْ تَكْفُرُونَ

"اگر یہ کافر تم پر قدرت پالیں تو تمہارے دشمن ہوجائیں اور ایذا کے لئے تم پر ہاتھ (بھی) چلائیں اور زبانیں (بھی) اور چاہتے ہیں کہ تم کسی طرح کافر ہوجاؤ"(الممتحنہ:2)۔ 

 

تو اے مسلمانو! حکمرانوں کے خطرناک ارادوں کو مسترد کردو اور خطے میں نبوت کے طریقے پر خلافت کے قیام کے ذریعے اسلام کی بالادستی کے لیے کام کرو۔

 

اے افواج پاکستان کے افسران! اے محمد بن قاسم، غزنوی، غوری اور اورنگ زیب کے جانشینوں!

پاکستان کے حکمران ہندو ریاست کے سامنے مسلمانوں کو محکوم بنانے کے لیے  کام کررہے ہیں اور اس راہ میں واحد رکاوٹ آپ ہیں۔ وہ ہندو جو مقبوضہ کشمیر میں لاکھوں کی تعداد  میں موجود ہیں لیکن کئی دہائیاں گز رجانے کے باوجود  انتہائی ہلکے اسلحے سے لیس چند ہزار مسلمان مجاہدین کو شکست نہیں دے سکے تو اندازہ کریں کہ وہ ہندو آپ کا سامنا کیسے کریں گے؟  آج کی عالمی طاقت امریکہ خطے میں اپنی موجودگی برقرار رکھنے کے لیے آپ کی طاقت  پر انحصار کررہی ہے اور وہ اس بات سے خوفزدہ ہے کہ کہیں آپ اسے  خطے سےبے دخل نہ کردیں جیسا کہ ماضی میں آپ نے سوویت روس کو دم دبا کر بھاگنے پر مجبور کردیا تھا۔  یہودی وجود اس بات سے خوفزدہ ہے کہ کہیں آپ مسجد الاقصی سے آنے والی پکار کے  جواب میں فلسطین کے مسلمانوں کو آزادی دلانے کے لیے نکل نہ پڑیں اور مسلم افواج کی قیادت کریں۔  آپ کا صرف ایک وار آپ پر واضح کردے گا کہ  مسلم امت  دنیا کی دیگر تمام اقوام پر کس قدر  برتری رکھتی ہے۔ اللہ سبحانہ و تعالیٰ نے فرمایا،

 

يا أيها الذين ءامنوا قاتِلوا الذين يَلونكم من الكفار وَلْيجِدوا فيكمْ غِلْظَةً واعْلَموا أنَّ اللّـهَ مع المتقين

"اے اہلِ ایمان! اپنے نزدیک کے (رہنے والے) کافروں سے جنگ کرو اور چاہیئے کہ وہ تم میں سختی دکھیں۔ اور جان رکھو کہ اللہ پرہیز گاروں کے ساتھ ہے"(التوبۃ:123)۔

 

اس غداری کو روکیں اور اس کو روکنے کا واحد طریقہ یہ ہے کہ نبوت کے طریقے پر خلافت کے قیام کے لیے حزب التحریر کو نصرۃ فراہم کریں تا کہ ہم اسلام کے نور اور انصاف کے ذریعے اپنے خطے میں امن اور تحفظ کامشاہدہ کرسکیں۔

  

 ولایہ پاکستان میں حزب التحریر کا میڈیا آفس

المكتب الإعلامي لحزب التحرير
ولایہ پاکستان
خط وکتابت اور رابطہ کرنے کا پتہ
تلفون: 
http://www.hizb-ut-tahrir.info
E-Mail: [email protected]

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.

دیگر ویب سائٹس

مغرب

سائٹ سیکشنز

مسلم ممالک

مسلم ممالک